The Latest

Anjamane Imamia Gilgitمرکزی انجمن امامیہ گلگت بلتستان نے علاقے کے کشیدہ بالخصوص ایک مرتبہ پھر شاہرائے قراقرم پر چلاس کے مقام پر متعدد مظلوم شیعہ مسافروں کی درندہ صف و حشی دہشت گردوں کے ہاتھوں المناک شہادتوں کو دہشت گردی کا قلعہ قمع کرنے کی دعویدار نام نہاد حکومت کے منہ پر طمانچے سے تعبیر کرتے ہو ئے کہا کہ گلگت بلتستان کی بیورکریسی اور صوبائی حکومت یکطرفہ ٹریفک چلا رہی ہے اور ظالم اور مظلوم کو ایک ہی صف ہی کھڑا کیا جارہا ہے۔ اعلامیہ میں ایک کالعدم دہشت گردو استحکام پاکستا ن کیخلاف سر گرم عمل تنظیم کی

Sakrdoo Dhar naبلتستان بھر کی طرح اسکردو میں بھی چلاس میں مومنین کی شہادتوں کے خلاف احتجاجی مظاہروں اور دھرنوں کا سلسلہ جاری رہا۔ اسکردو میں کمشنر ہائوس کے سامنے ہزاروں لوگوں نے طویل دھرنا دیا جو بعد ازاں مقامی انتظامیہ کی جانب سے مطالبات کی منظوری کے بعد ختم کردیا گیا، ہزاروں مظاہرین نے اس موقع پر گلگت میں ہونے والے دہشت گردی کے واقعات پر کوئی ایکشن نہ لینے پر حکومت وقت بالخصوص گلگت بلتستان کے وزیراعلی مہدی شاہ، وفاقی وزیر داخلہ رحمان ملک کے خلاف شدید نعرے بازی کی۔ اس موقع پر

Youth of Gilgit Lahoreچیلاس میں بس سے مسافروں کو اتار کر شہید کرنے اور گلگت میں جاری فرقہ وارانہ فسادات میں مخصوص فرقہ کو نشانہ بنائے جانے کے خلاف یوتھ آف گلگت بلتستان نے لاہور پریس کلب کے باہر احتجاجی مظاہرہ کیا۔ مظاہرین نے کتبے اور پلے کارڈ اٹھا رکھے تھے جن پر گلگت میں قیام امن اور دہشت گردی کے خاتمہ کے مطالبات درج تھے۔ مظاہرین نے دہشت گردی کے خلاف شدید نعرے بازی کی اور حکومت سے مطالبہ کیا کہ گلگت بلتستان میں امن و امان کی صورتحال بہتر کی جائے اور شاہراہ قراقرم کے اردگرد قائم دہشت گردوں

Sindh Protestمجلس وحدت مسلمین سندھ کے سیکرٹری جنرل علامہ مختار امامی نے کہا ہے کہ کراچی، کوئٹہ اور گلگت میں ہونے والے واقعات پاکستان کو غیر مستحکم کرنے کی سازش کا تسلسل ہیں، ملک بھر میں ہونے والی شیعہ نسل کشی میں امریکہ اور اسرائیل ملوث ہیں۔ انہوں نے ان خیالات کا اظہار کراچی اور کوئٹہ میں ٹارگٹ کلنگ اور گلگت میں چلاس کے مقام پر گیارہ بے گناہ شیعہ مسافروں کو امریکی نواز دہشت گردوں کے ہاتھوں شہید کیے جانے کے خلاف ہنہونے والے احتجاجی مظاہرے کے دوران کیا ۔ اس موقع پر مجلس وحدت مسلمین

Shuhdae Chilasسانحہ چلاس کے شہدا کی مسخ شدہ نعشیں گلگت پہنچ گئیں، علاقہ سے ملنے والی اطلاعات کے مطابق6نعشیں ناقابل شناخت ہیں جو ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال میں رکھی گئی ہیں جبکہ شناخت کی جانے والی دو نعشوں کو سکردہ اور ایک کو ہنزہ نگر روانہ کر دیا گیا ہے ، ایک عینی شاہد کے مطابق دہشت گرد مقامی تھے وہ گاڑیوں اور موٹر سائیکلوں پر آئے اور انہوں نے چلاس سے تیس پینتیس کلومیٹر دور گونر فارم کے نزدیک بسوں کو روکا اور مسافروں کو شناخت کرنے کے بعد نیچی اتار کر گولیاں ماریں ، بعد ازاں انہوںنے نعشوں کو پتھروں

Jawan Protestمجلس وحدت مسلمین پاکستان شعبہ امور جوانان کے زیر اہتمام ، سانحہ چلا س اور گلگت بلتستان کی مخدوش صورتحال کے خلاف نیشنل پریس کلب اسلام آباد کے سامنے ایک بڑا احتجاجی مظاہرہ کیا ، مظاہرین کی قیادت ایم ڈبلیو ایم شعبہ امور جوانان کے مرکزی سیکرٹری علامہ شیخ اعجاز حسین بہشتی مرکزی سیکرٹری فلاح و بہبود نثار علی فیضی ، پنجاب کے ڈپٹی سیکرٹری علامہ اصغر عسکری راولپنڈی اسلام آباد کے ضلعی سیکرٹری جنرل علامہ فخر علوی راہنما عابد حسین بہشتی اور دیگر قائدین نے کی، اس دوران سینکڑوں جوانوں نے چلاس میں دہشت

Gilgt Baltistanچلاس کے نزدیک دہشت گردوں کی سفاکانہ فائرنگ سے گلگت بلتستان اور ملحقہ علاقوں سے تعلق رکھنے والے 9 مسافروں کی مظلومانہ شہادت کے بعد اٹھنے والی احتجاج کی لہر کے پیش نظر گلگت شہر کو سیل کر دیا گیا ، اس وقت پو رے شہر میں فوج اور سیکورٹی فورسز گشت کر رہی ہیں اور ملحقہ علاقوں سے گلگت جانے والی تمام سڑکیں اور شاہراہیں بند ہیں ، گلگت شہر میں موبائل نیٹ ورک اور دیگر مواصلاتی جام کر دیا گیا ، تاہم علاقہ کے مکین کرفیو کی پرواہ نہ کرتے ہوئے گلگت کا رخ کر رہے ہیں ،

Press Confrance 3rd April 2012-1مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے سیکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے کہا ہے کہ دہشتگرد کی گرفتاری کیخلاف ہڑتال کا اعلان اور ہڑتال کی آڑ میں فورسز، پولیس اسلحہ ڈپو اور بے گناہ عوام اور گھروں پر حملہ اور بے دریغ فائرنگ نے علاقے کا امن و امان تباہ ہو گیا،چلاس کے مقام پر سفاک دہشت گردوں نے ایک بار پھر بے گناہ انسانوں کو مسافر بسوں سے اتار کر ان شناختی کارڈ چیک کر نے بعد گولیوں کی بوچھاڑ کر کے موت کی وادی میں دھکیل دیا ، مجلس وحدت مسلمین ان واقعات کیر پور مذمت کرتی ہے

Aagha nair Mustafviمجلس وحدت مسلمین گلگت بلتستان کے سیکرٹری جنرل علامہ نیئر عباس مصطفوی نے کہا ہے کہ گلگت بلتستان میں حالت کی خرابی کی ذمہ داری وزارت داخلہ پاکستان اور گلگت کی انتظامیہ پر عائد ہوتی ہے ، اگر سانحہ کوہستان کے بعد ملت جعفریہ کی جانب سے پیش کردہ چارٹرد آف ڈیمانڈ پر عمل درآمد کیا جاتا تو آج یہ صورت حال پیدا نہ ہوتی ، مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی دفتر سے جاری ہونے والے پریس ریلیز میں علامہ نیئر عباس مصطفوی نے بتایا کہ ایک جانب تو وزیر داخلہ کی ٹھوس یقین دہانیوں کے باوجود

Chalasگلگت میں ہونے والے واقعات پر مشتعل افراد چلاس میں جمع ہوئے جہاں انہوں نے بسوں کو گھیر لیا اور 6مسافروں کو بسوں سے اتار کر فائرنگ کر کے شہید کر دیا اور 6بسوں کو آگ لگا دی،جس کے بعد گلگت اور چلاس میں جاری بد امنی میں ہلاکتوں کی تعداد 10ہو گئی ہے ،اس سے قبل گلگت میں شٹر ڈائون ہڑتال کے دوران دو گروپوں میں فائرنگ کا تبادلہ ہوا اور دستی بم اور پتھروں سے حملے کئے گئے جس کے نتیجے میں 4افراد ہلاک اور 45زخمی ہوئے تھے تشد کے ان سنگین واقعات کے بعد گلگت میںکرفیو لگا دیا گیا ہے.

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree