علامہ راجہ ناصر عباس جعفری بلتستان پہنچ گئے

05 كانون1/ديسمبر 2012

سیکرٹری جنرل مجلس وحدت مسلمین پاکستان جوکہ ان دنوں بلتستان گئے ہوئے ہیں نے خپلو کے علاقے ژنو جاکر علامہ حافظ حسین نوری مرحوم کے والد اور بیٹوں سے اظہار تعزیت کی ،جبکہ دوسری جانب علامہ راجہ ناصر عباس جعفری اور وفد نے مقامی سیاسی سماجی اور دینی شخصیات سے بھی ملاقات کی ادھر علامہ ناصر عباس جعفری کی سکردو آمد کی خبر پھیلنے کے بعد مقامی شخصیات و عمائدین اور عوام علامہ راجہ ناصر عباس جعفری سے ملاقات کی غرض سے ان کی قیام گاہ تشریف لارہے ہیں،علامہ راجہ ناصر عباس جعفری کے ہمراہ ایک اعلی سطحی وفد جس میں علامہ سید حسنین گردیزی،علامہ اقبال بہشتی اور علامہ اعجاز بہشتی بھی شامل ہیں 
واضح رہے کہ علامہ حافظ حسین نوری جوکہ مجلس وحدت مسلمین کے شوری عالی کے رکن اور بلتستان میں مجلس وحدت مسلمین کے سربراہ تھے عشرہ محرم میں مجلس عزاسے واپسی پر ایک کار حادثے میں جاں بحق ہوئے تھے ۔
علامہ حافظ حسین نوری اپنے منفرد رویشی صفتی اور قومیات میں انتہائی متحرک ہونے کے سبب ہردل عزیز تھے علامہ حافظ حسین نوری دھیما مزاج ضرور رکھتے تھے لیکن اصولی اور خاص کر قومیات کے معاملے میں انتہائی ڈٹ جاتے تھے جس کی بہت سی مثالیں بلتستان اور خاص کر مجلس وحدت مسلمین کی تشکیل کے وقت سامنے آئیں 
حافظ حسین نوری نے بہت سے علامہ کے برعکس خود کو درس و تدریس یا پھر پیش امامی تک محدود نہیں رکھا بلکہ وہ قریہ قریہ دیہات دیہات جاتے اور تبلیغ دین کرتے تھے سیاسی اور سماجی مسائل میں کھلے لفظوں اپنی رائے پیش کرتے تھے بہت سے سیاسی معاملات میں اہم تجزیے پیش کرتے اور دوستوں کی رہنمائی کیا کرتے تھے 
وہ کہا کرتے تھے کہ امت مسلمہ کے درمیان وحدت صرف ایک پالیسی یا اسٹراٹیجی نہیں بلکہ ہمارے فقہاکے بقول یہ ایک شرعی فریضہ ہے ،ایک قرآنی اصول ہے ۔
علامہ حافظ نوری بلتستان میں ہونے والے عوامی جلسوں اورخاص کر مذہبی سیاسی مسائل کے لئے ہونے والے احتجاجات کی قیادت کیا کرتے تھے ۔
علامہ حافظ نوری کا شمار ان شخصیات میں ہوتا ہے جن سے علمائے کرام بھی استخارہ کرایاکرتے تھے جس کی بڑی وجہ ان کی شخصیت کا علمی و اخلاقی اور الھی پہلو تھا ان کے قریب ترین افراد کا کہنا ہے کہ وہ ایک عالم دین ہونے کے ساتھ ساتھ ایک عارف بھی تھے جنہوں نے سیروسلوک کی کئی منزلیں طے کیں تھیں

ترك تعليقك

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree